مئی 18, 2024

کرکٹ قوانین میں اہم تبدیلیاں کر دی گئیں

سیاسیات- انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے مینز اور ویمنز ایونٹس کے لیے یکساں انعامی رقم کا اعلان کر دیا۔

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے مختلف لیگز کے حوالے سے قانون سازی کرلی ہے ، اب لیگز کھلاڑیوں کے ہوم بورڈ کو کھلاڑی کی سائننگ کے عوض فیسں دینے کی پابند ہوں گی جبکہ پلیئنگ الیون میں کھلاڑیوں کی تعداد پر بھی شرائط عائد کردی گئی ہیں۔

ڈربن میں ہونیوالے آئی سی سی اجلاس کے بعد جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ آئندہ ہونے والی انٹرنیشنل لیگز میں ٹیموں کی فائنل الیون میں زیادہ سے زیادہ چار اوور سیز کھلاڑی ہی کھیل سکیں گے تاہم ایسوسی ایٹ ملک کی نمائندگی کرنے والے کھلاریوں کو سات لوکلز  کھلاڑیوں کی فہرست میں شامل کیا جاسکے گا۔

فوری طور پر موجودہ لیگز پر اس کا اطلاق نہیں ہوگا جس کی وجہ سے آئی ایل ٹی ٹوئنٹی اور میجر لیگ ٹی ٹوئنٹی لیگ کو استثنیٰ حاصل ہوگا مگر مستقبل میں انہیں اس پر عملدرآمد کرنا ہوگا۔

آئی سی سی اجلاس میں اس معاملے پر پاکستان نے لیگز کو کنٹرول کرنے کے حق میں ووٹ دیا تھا۔

اجلاس میں سلو اوور ریٹ قانون پر بھی ترامیم کی گئیں اور طے کیا گیا کہ پلیئرز پر فی اوور پانچ فیصد جرمانہ ہوگا اور زیادہ سے زیادہ 50 فیصد میچ فیس کا ہی جرمانہ ہو سکے گا۔

واضح رہے کہ حال ہی میں انڈیا کی ٹیم کے پلیئرز  پر پوری 100 فیصد میچ فیس کا جرمانہ عائد کر دیا گیا تھا۔

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے اجلاس میں مردوں اور خواتین کے آئی سی سی ایونٹس میں یکساں انعامی رقم دینے کی بھی منظور دیدی گئی جبکہ آئی سی سی کا نیا فنانشل ماڈل بھی منظور کر لیا گیا جس کے تحت انڈین کرکٹ بورڈ کو آئی سی سی آمدن کا بڑا حصہ ملے گا۔

Facebook
Twitter
Telegram
WhatsApp
Email

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

eleven − 5 =