مئی 18, 2024

ریکارڈ ساز فتح کے بعد سابق بھارتی کرکٹرز اور کمنٹیٹرز پاکستانی بیٹنگ لائن کی تعریف کرنے پر مجبور

سیاسیات-آئی سی سی ورلڈکپ میں سری لنکا کے خلاف ریکارڈ ساز فتح کے بعد سابق بھارتی کرکٹرز اور کمنٹیٹرز پاکستانی بیٹنگ لائن کی تعریف کرنے پر مجبور ہوگئے۔

گزشتہ روز سری لنکا کیخلاف میچ میں عبداللہ شفیق اور محمد رضوان نے سنیچریاں اسکور کیں اور ٹورنامنٹ میں مسلسل دوسری جیت درج کی۔

اس میچ میں آئی لینڈرز نے مقررہ 50 اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 344 رنز بنائے، کوشال مینڈس 122 اور سمارا وکرما 108 رنز بناکر نمایاں رہے تھے جبکہ ہدف کے تعاقب میں قومی ٹیم نے 4 وکٹوں کےنقصان پر 49 ویں اوور میں 345 رنز کا پہاڑ جیسا ٹارگٹ حاصل کرلیا۔

عبداللہ شفیق نے صرف پانچویں ون ڈے میں کھیلتے ہوئے 113 رنز بنائے، جس میں 10 چوکے اور 3 چھکے شامل تھے جبکہ محمد رضوان نے 131 رنز کی ناقابلِ شکست اننگز کھیلی۔

دونوں بیٹرز نے ریکارڈ ہدف کیلئے 176 رنز کی پارٹنرشپ قائم کی اور پاکستان کو میچ جتوانے میں اہم کردار ادا کیا۔

پاکستان مخالف ٹوئٹ کیلئے مشہور عرفان پٹھان نے لکھا کہ کیپنگ کے 50 اوورز اور پھر دباؤ میں اسپین اٹیک کیخلاف شاندار سینچری! رضوان نے شاندار کھیل پیش کیا۔

معروف کمنٹیٹر ہرشا بھوگلے نے لکھا کہ 50 اوورز فارمیٹ کا بہترین رن چیز، جہاں اننگز بنائی جاتی ہیں وہاں عبداللہ شفیق کا کردار بہت اہم رہا۔

سابق کرکٹر محمد کیف لکھا کہ رضوان نے ون ڈے کیرئیر کی بہترین اننگز کھیلی اور بولر کو ٹارگٹ کرکے اٹیک کیا۔

بھارتی صحافی وکرانت گپتا نے لکھا کہ رضوان حقیق طور پر پاکستان کیلئے میچ ونر ہیں، کبھی ہار نہیں مانتے، پاک بھارت میچ کیلئے اچھا سیٹ اَپ تیار ہوچکا ہے۔

سابق کرکٹر سنجے منجریکر نے لکھا کہ جب رضوان کو فیلڈ میں درد ہوا تو سری لنکا جانتا تھا وہ مشکل میں ہیں لیکن کیا بہترین کھیل کا مظاہرہ کیا! زبردست

معروف کمنٹیٹر اور سابق کرکٹر اکاش چوپڑا نے لکھا کہ رفتار کے خلاف ٹھوس، اسپن کیخلاف آرام دہ عبدللہ شفیق نے شاندار کھیل پیش کیا، مشکلات سے بہترین چیزیں نکالتی ہیں۔

Facebook
Twitter
Telegram
WhatsApp
Email

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

15 − twelve =