جولائی 17, 2024

کراچی: بلدیاتی الیکشن کے نتائج مکمل، پیپلز پارٹی نے میدان مار لیا، جماعت اسلامی دوسرے اور پی ٹی آئی تیسرے نمبر پر رہی

سیاسیات- شہر قائد کے بلدیاتی انتخابات میں الیکشن کمیشن نے تمام 235 یوسیز کے نتائج جاری کردیے جن کے مطابق پیپلز پارٹی نے کراچی میں سب سے زیادہ نشستیں حاصل کرلیں، جماعت اسلامی دوسرے اور پی ٹی آئی تیسرے نمبر پر ہے۔

الیکشن کمیشن سے موصولہ نتائج کے مطابق پیپلز پارٹی نے 93 یوسیز سے کامیابی حاصل کی ہے۔ دوسرے نمبر پر جماعت اسلامی ہے جو 86 نشستوں پر کامیاب ہوئی جب کہ تیسرے نمبر پر پی ٹی آئی رہی جس نے یوسی چیئرمین وائس چیئرمین کی 40 نشستیں حاصل کیں۔

مسلم لیگ (ن) نے سات، جے یو آئی (ف) نے تین، ٹی ایل پی نے دو اور مہاجر قومی موومنٹ نے ایک نشست پر کامیابی حاصل کی، تین یوسیز سے آزاد امیدوار جیتے۔

10 یوسیز پر امیدوارں کے انتقال کے باعث پولنگ نہیں ہوئی اور ایک نشست پر پیپلز پارٹی کے یوسی چیئرمین وائس چیئرمین بلامقابلہ کامیاب ہوئے۔

سندھ کے بیشتر اضلاع میں پیپلز پارٹی کامیاب

اندرون سندھ کے بیشتر اضلاع میں پیپلز پارٹی چھائی رہی اور بیشتر نشستیں حاصل کرکے سرفہرست رہی۔ بلدیاتی انتخابات کے دوران، حیدرآباد، جوہی، سیہون، ٹھٹھہ، جامشورو، خیرپور ناتھن، مٹیاری، میہڑ، دادو، سجاول، بدین میرپور ساکرو، ماتلی و دیگر اضلاع کی یونین کمیٹیوں میں پیپلزپارٹی کے امیدوار کامیاب ہوئے۔

کراچی کی طرح حیدرآباد کے بلدیاتی انتخابات کے نتائج بھی موصول ہونے کا سلسلہ جاری ہے اور وہاں بھی پیپلز پارٹی کو سبقت حاصل ہے۔ غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج کے مطابق حیدر آباد ضلع کی تین ہزار سے ایک سو ایک نشستوں میں سے پیپلز پارٹی ایک ہزار 34 نشستیں حاصل  کرکے سرفہرست ہے۔

اسی طرح موصولہ دیگر جماعتوں کے نتائج کے مطابق پی ٹی آئی 126 نشستوں کے ساتھ دوسرے، جماعت سلامی 111 نشستوں کے ساتھ تیسرے اور گرینڈ ڈیمو کریٹک الائنس 15 نشستوں کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہے، جمعیت علمائے اسلام (ف) نے گیارہ نشستیں اور سندھ یونائیٹڈ پارٹی نے 8 نشستیں حاصل کیں جب کہ آزاد امیدوار بھی چھائے رہے اور انہوں ںے 92 نشستیں حاصل کرلیں۔

Facebook
Twitter
Telegram
WhatsApp
Email

One Response

  1. جماعت اسلامی پاکستان کو چاہیے کہ پاکستان پیپلز پارٹی سے اتحاد کر کے کراچی میں میئر اور حیدرآباد میں وائس میئر کے لئے بات چیت کرے ۔اس طرح آنے والے قومی اسمبلی اور صوبائی اسمبلی کےلئے بھی بہتر پوزیشن بن سکتی ہے ۔اگر دیگر جماعتوں سے اتحاد کیا گیا تو فنڈز کی عدم دستیابی سے عوام میں ایکسپوز ہوجائے گی ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

ten + nine =