اپریل 10, 2024

مسلم لیگ ن نے وزیر اعلی پنجاب کے خلاف عدالت جانے کا اعلان کر دیا

سیاسیات- مسلم لیگ ن نے وزیراعلیٰ پنجاب کے اعتماد کے ووٹ کی کارروائی مسترد کرتے ہوئے کارروائی عدالت میں چیلنج کرنے کا اعلان کردیا۔

چوہدری پرویز الٰہی رات گئے  پنجاب اسمبلی میں اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے، انہوں نے 186ووٹ حاصل کیے۔

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے کل پرویز الہٰی پر اعتماد کے ووٹ پر رائے شماری کیلئے پنجاب اسمبلی میں راتوں رات کارروائی شروع کی۔

راجہ بشارت اور میاں اسلم اقبال نے اعتماد کے ووٹ کی قرارداد پیش کی جس کے بعد ووٹنگ کا عمل جاری رہا، ووٹنگ کی گنتی کے مطابق پرویز الٰہی نے 186ووٹ کا گولڈن فیگر حاصل کرلیا۔

مسلم لیگ ن کے رہنماؤں نے لاہورمیں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پنجاب کے اعتماد کے ووٹ کی کارروائی مسترد کرتے ہوئے کارروائی عدالت میں چیلنج کرنے کا اعلان کیا۔

وفاقی وزیرداخلہ راناثنااللہ نے کہا کہ پنجاب اسمبلی کا آج کا اجلاس غیر آئینی ہے ،تسلیم نہیں کرتے،آج کے اجلاس کی کارروائی میں جھوٹ بولا گیا،رات 12بجے کے بعد دوسرا ایجنڈا جاری کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ الیکشن کے تقاضے پورے نہیں کیے،ہیرا پھیری کر کے غیرآئینی، غیر قانونی کام کیا گیا۔

رانا ثنا اللہ نے دعویٰ کیا کہ پرویز الٰہی کے پاس 181 سے زیادہ ووٹ کل تھے نا آئندہ ہوں گے۔

اس کے علاوہ لیگی رہنما عطا اللہ تارڑ نے کہا کہ قانونی کارروائی کا حق محفوظ رکھتے ہیں،عدالتی کارروائی میں ثابت کرینگے کہ ان کے پاس 186 ارکان نہیں تھے۔

Facebook
Twitter
Telegram
WhatsApp
Email

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

ten − 3 =