جون 23, 2024

مغرور امریکی بحیرہ احمر کو میدان جنگ نہ بنائیں غزہ میں جارحیت ختم کریں۔ سید حسن نصراللہ

سیاسیات-لبنانی تنظیم حزب اللہ کے سربراہ سید حسن نصراللہ نے کہا ہےکہ بحیرہ احمر میں امریکی اقدامات نے تمام جہازوں کی آمدورفت کو  خطرے میں ڈال دیا، امریکی اقدامات کے بعد بحیرہ  احمر میدان جنگ بن گیا ہے۔

بیروت میں خطاب کرتے ہوئے حسن نصراللہ کا کہنا تھا کہ امریکہ اور برطانیہ کے حملوں کے بعد یمنی بحیرہ احمر میں غزہ کی حمایت روک دیں گے یہ امریکہ کی غلط فہمی ہے، بحیرہ احمر میں اسرائیل جانے والے بحری جہازوں پر حملے جاری رہیں گے۔

حسن نصراللہ کا کہنا تھا کہ  جہازوں پر حملےاسرائیلی جارحیت کے جواب میں یمن کا کم ترین ردعمل ہے، لبنان کے محاذ  پر بھی غزہ کی حمایت اسرائیلی جارحیت  رُکنے تک جاری  رہے گی، غزہ میں جارحیت رُکےگی تو کوئی بات چیت ہوگی، عراقی اور  یمنیوں کا بھی غزہ میں جارحیت رکوانےکا مطالبہ ہے۔

حزب اللہ کے سربراہ کا کہنا تھا کہ ان بے وقوفوں نے بحیرہ احمر میں عالمی جہازوں کے 95 فیصد تحفظ کو بھی تباہ کردیا ہے، اگر امریکیوں کے پاس دماغ ہوتا تو انہیں سمجھ آتی کہ تمام محاذ کُھلنےکا سبب ایک ہی ہے، اگر امریکی نسل پرست اور مغرور نہ ہوتے تو  یہ بات سمجھ جاتے، یہ نتائج روکنے کی کوششوں میں ہیں، جائیں جا کر وجہ ٹھیک کریں، غزہ میں جارحیت ختم کریں۔

Facebook
Twitter
Telegram
WhatsApp
Email

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

seventeen − 14 =