اپریل 24, 2024

غزہ 66 دن سے ظلم کی تاریکی کا شکار، ایسی نسل کشی کبھی انسانیت نے نہیں دیکھی، علامہ ساجد نقوی

سیاسیات- قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے تشویش کا اظہار کیا ہے کہ غزہ 66 دن سے ظلم کی تاریکی کا شکار، ایسی نسل کشی کبھی انسانیت نے دیکھی نہ سنی جو ظلم و جبر و تشدد غز ہ پر 7 اکتوبر کے بعد سے آج تک جاری ہے۔

جنرل اسمبلی، سلامتی کونسل، او آئی سی سمیت عالمی ادارے بری طرح ناکام ہو گئے ہیں، دنیا نے ظلم و تشدد کے موقع پر بھی اعلانیہ جانبداری دکھائی، اس سے بڑا ظلم، اس سے بڑی دہشتگردی اور اس سے بڑھ کر نسل کشی اور کیا ہوگی کہ شیرخوار بچوں سمیت حاملہ خواتین تک کو درندگی کانشانہ بناتے ہوئے بموں سے اڑا دیا گیا، ہسپتالوں، مساجد، گرجا گھروں اور سکولوں سمیت رہائشی عمارتوں کو نشانہ بنا کر انسانیت کو درگور کر دیا گیا، مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے ماہرین، دانشور، صحافی، سماجی و سیاسی شخصیات، ادیب اور رضا کاروں سمیت سب کو چن چن کر نشانہ بنایا گیا، انسانی وقار خاک میں مل چکا ہے، استعماریت کو کھلی چھوٹ مل چکی۔ ان خیالات کا اظہار قائد ملت جعفریہ نے صحت سہولیات اور غیر جانبداری کے یوم پر اقوام عالم کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ افسوس کہ عالمی ادارہ اقوام عالم کے لئے انسانی حقوق کی فراہمی کے اپنے مشن میں کامیاب نہ ہو سکا، بڑی ریاستوں اور جارح ممالک کے سامنے اقوام عالم کے سب سے بڑے ادارے کی ایک نہیں چلتی۔ انہوں نے مزید کہا کہ یو این سیکرٹری جنرل سلامتی کونسل کے مفلوج ہونے کی دہائی دے رہے ہیں کیونکہ انسانی حقوق پامال ہو چکے، شیطان اپنی آب و تاب کیساتھ استعماریت کو کھلی چھوٹ دے چکا۔

Facebook
Twitter
Telegram
WhatsApp
Email

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

19 − 7 =