اپریل 23, 2024

غزہ: اسرائیل کی جانب سے القدس اسپتال کو نشانہ بنانے کا خطرہ

سیاسیات-اسرائیل کی جانب سے غزہ میں وحشیانہ بمباری کا سلسلہ جاری ہے اور حال ہی میں غزہ کے ترکش اسپتال میں بمباری سے تباہی دیکھنے میں آئی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق  چند روز قبل صیہونی افواج کے اسپتال پر ہونے والے تازہ حملے میں 800 سے زائد فلسطینی شہیداور 1000 سے زائد زخمی ہوئے تھے جس کے بعد  اب ایک بار پھر غزہ کےترکش اسپتال میں بمباری سے تباہی  دیکھنے میں آئی ہے۔

یہی نہیں اسرائیل نے  غزہ کا دوسرا بڑا القدس اسپتال فوری خالی کرنے کی دھمکی دی ہے  اور بتایا گیا ہے کہ اسرائیل کی جانب سے غزہ کے دوسرے بڑے القدس اسپتال کو نشانہ بنائےجانے کا خطرہ ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق اسپتال کے اطراف میں اسرائیل کی وحشیانہ بمباری جاری ہے جس کے باعث اٹھنے والے بارود اور دھوئیں سے زخمیوں اور پناہ لینے والوں کا دم گھٹنے لگا ہے۔

غزہ کے القدس اسپتال میں 14 ہزار افراد موجود ہیں، بچوں اور عورتوں سے کوریڈور بھی بھرے ہوئے ہیں۔

غزہ میں 47 مساجد اور 7 چرچ بھی تباہ

غیر ملکی میڈیا کےمطابق غزہ حکومت کا کہنا ہےکہ 7 اکتوبر سے غزہ پر جاری اسرائیلی جارحیت میں 47 مساجد اور 7 چرچ بھی تباہ ہوچکے ہیں جب کہ اسرائیل فوج نے 203 اسکول اور 80 سے زائد سرکاری دفاتر کو بھی تباہ کردیا۔

اقوام متحدہ کے امدادی ادارے کا کہنا ہےکہ اتوار کے روز براستہ رفاح غزہ میں 33 ٹرک امدادی سامان لے کر داخل ہوئے ہیں جن میں پانی، کھانا اور طبی سہولیات کا سامان ہے، یہ 21 اکتوبر سے غزہ میں جانے والی امداد میں سب سے بڑی امداد ہے۔

مغربی کنارے پر تین ہفتوں میں 112 فلسطینی شہید

رپورٹس کےمطابق مقبوضہ مغربی کنارے پر اسرائیل فورسز کے حملوں میں تین ہفتوں کے دوران 112 فلسطینی شہید ہوچکے ہیں۔

سیو دی چلڈرن کا کہنا ہےکہ غزہ میں موت کی آغوش میں جانے والے بچوں کی تعداد4 سال میں دنیا بھر کے تنازعات میں مارے گئے بچوں سے زیادہ ہے، غزہ میں شہید بچوں کی تعداد2019 سےاب تک دنیابھرمیں تنازعات کے دوران ہلاک بچوں کی تعداد سے زیادہ ہے۔

اسرائیلی حملوں سے شہید فلسطینیوں کی تعداد 8 ہزار سے متجاوز

دوسری جانب سے اسرائیل کی بمباری سے تباہ علاقوں میں امدادی کارروائیوں کے دوران  بھی ارد گرد بمباری کا سلسلہ جاری ہے جس کے نتیجے میں  مزید سیکڑوں فلسطینی شہید ہوئے جس کی  تعداد8  ہزار سے اوپر چلی گئی ہے۔

اسرائیلی فورسز نے جہاں غزہ پر فضائی حملے اور گولہ باری تیز کردی ہے وہیں صیہونی طاقت کی جانب سے زمینی کارروائی میں ہچکچاہٹ برتی جارہی ہے، اسرائیل کا شمالی غزہ میں 2 میل تک اندر گھسنے اور فلسطینی مجاہدین سے جھڑپوں کا دعویٰ ہے۔

غزہ کے مغربی کنارے میں بھی اسرائیل کے ایک اور فضائی حملے کی اطلاعات ہیں جب کہ جنین میں ایک فلسطینی شہید اور متعدد زخمی  ہوگئے ہیں ۔

Facebook
Twitter
Telegram
WhatsApp
Email

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

one × 5 =