اپریل 20, 2024

سوئیڈن میں توہین قرآن کریم جیسی حرکت دہرائی گئی تو اعلان جنگ تصور ہو گا۔ حزب اللہ عراق

سیاسیات-عراقی حزب اللہ بٹالینز کے جنرل سکریٹری حسین الحمیداوی نے کہا ہے کہ قرآن کریم کی توہین کرنے والے کے خلاف سخت الہی سزا کے نفاذ کی کوششوں کو بڑھایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایک شرعی اور مذہبی فریضہ ہے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق الحمیداوی نے کہا کہ سوئیڈن کی حکومت جان لے کہ اگر اس طرح کی توہین دوبارہ کی گئی تو اس ملک کی حکومت کے ساتھ خدا، رسول اور مومنین کے ساتھ محارب حکومت جیسا سلوک کیا جائے گا۔ عراق کی عصائب اہل حق موومنٹ کے سکریٹری جنرل قیس خز علی نے بھی کل اعلان کیا ہے کہ قرآن کریم کی حمایت میں عراقی عوام کا مظاہرہ، اس ملک کی قوم کی تہذیب و ثقافت کا اظہار ہے، اس سلسلے میں عراقی حکومت کا موقف عراقی عوام کی رائے اور ان کی ثقافت اور وقار کی عکاسی کرتا ہے۔ خز علی نے کہا کہ قرآن کریم کی بے حرمتی کے خلاف مسلمانوں نے جو بھی ردعمل ظاہر کیا وہ اپنے مذہب، اپنی مقدس کتاب اور عقائد کے بارے میں ان کی حساسیت اور جوش کو ظاہر کرتا ہے۔

عصائب اہل حق موومنٹ کے سکرٹری جنرل نے ڈنمارک میں قرآن کریم کی بے حرمتی کرنے والے انتہا پسند گروہ کے اقدام کے بارے میں کہا کہ اگر یہ واضح اور ثابت ہو جائے کہ یہ کارروائی ڈنمارک کی حکومت کی حمایت سے کی گئی ہے، تو اس ملک کے ساتھ سوئیڈن کی طرح نمٹا جائے، اسے پہلے انتباہ جاری کیا جائے اور اگر ایسا دوبارہ کیا گیا تو عراق سے ڈینش سفیر کو اخراج جب کہ ڈنمارک سے عراقی سفیر کو واپس بلایا جائے۔ ادھر اسلامی تعاون تنظیم کے سیکرٹریٹ نے کل سویڈش حکومت کو مطلع کیا کہ اس تنظیم نے سوئیڈن کے خصوصی نمائندے کی حیثیت کو معطل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اسلامی تعاون تنظیم کے سیکرٹریٹ نے سٹاک ہوم کی جانب سے قرآن پاک کی بے حرمتی کے لیے لائسنس جاری کرنے کے اقدام کو اس فیصلے کی وجہ قرار دیا۔ مذکورہ سیکرٹریٹ کے بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ یہ فیصلہ اسلامی تعاون تنظیم کی ایگزیکٹو کمیٹی کے رواں سال کے 2 ماہ میں ہونے والے غیر معمولی اجلاس میں طے کی گئی حتمی سفارشات کے مطابق کیا گیا ہے۔

Facebook
Twitter
Telegram
WhatsApp
Email

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

12 − six =