مئی 20, 2024

بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی مسلسل تیسرے روز جاری،مزید 2 کشمیری نوجوان شہید

سیاسیات- مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی آج مسلسل تیسرے روز بھی جاری ہے جس میں مزید 2 کشمیری نوجوانوں کو نام نہاد سرچ آپریشن کی آڑ میں شہید کردیا گیا۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق پونچھ کے بعد بھارتی فوج نے ضلع کپواڑا میں بھی اپنی روایتی جارحیت اور ریاستی دہشت گردی کا مظاہرہ کیا۔ داخلی اور خارجی راستوں کو بند کرکے گھر گھر تلاشی لی گئی۔

سرچ آپریشن کے دوران چادر اور چار دیواری کے تقدس کو پامال کیا گیا۔ گھروں میں موجود خواتین کو ہراساں کیا گیا اور احتجاج کرنے پر بزرگوں کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا گیا جس سے بچے سہم گئے۔

اسی دوران قابض بھارتی فوج نے ایک گھر پر اندھا دھند فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں 2 نوجوان شہید ہوگئے۔ نوجوان نہتے تھے اور مقامی کالج کے طالب علم بتائے جاتے ہیں۔

مقبوضہ کشمیر کی بھارت نواز کٹھ پتلی انتظامیہ نے روایتی ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے نوجوانوں کو عسکریت پسند ثابت کرنے کی کوشش کی۔ کشمیری پولیس کا کہنا تھا کہ نوجوان علیحدگی پسند تنظیم کے کارندے تھے۔

اہل خانہ اور علاقہ مکینوں نے کشمیری پولیس کے مؤقف کو لغو قرار دیتے ہوئے کہا کہ نوجوانوں کا کسی تنظیم سے تعلق نہیں تھا اور وہ مقابلے کے وقت نہتے تھے۔

یاد رہے کہ مقبوضہ کشمیر میں پیر کے روز سے جاری بھارتی فوج کی جارحیت میں شہید ہونے والے نوجوانوں کی تعداد 8 ہوگئی۔

Facebook
Twitter
Telegram
WhatsApp
Email

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

twenty + four =