جون 3, 2024

اسرائیل نے حماس لیڈر کو کیسے شہید کیا؟ حقائق سامنے آگئے

سیاسیات- چند روز قبل لبنان کے دارالحکومت میں مقیم حماس کے نائب سربراہ صالح العروری اسرائیل کے ایک حملے میں 6 افراد سمیت شہید ہوگئے تھے لیکن اس پُراسرار حملے سے متعلق تفصیلات سامنے نہیں آسکی تھیں۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اسرائیل نے لبنان میں حماس کے نائب سربراہ صالح العروری کی ٹارگٹ کلنگ کو اپنی بڑی کامیابی قرار دیا تھا تاہم اس کے بارے میں تفصیلات بتانے سے گریز کیا تھا۔

اسرائیلی فوج نے بس اتنا ہی بتایا تھا کہ حماس کے اہم اور سرگرم رہنما صالح العروری کو انٹیلی جنس معلومات کی بنیاد پر کامیابی سے نشانہ بنایا۔ اسرائیلی فوج نے مزید سوالات کے جوابات دینے سے معذرت کرلی تھی۔

دوسری جانب لبنانی میڈیا نے دعویٰ کیا تھا کہ جنوبی بیروت کے علاقے میں ایک گھر پر اسرائیلی ڈرون حملے میں صالح العروری شہید ہوگئے تاہم اسرائیلی فوج نے صالح العروری کی ٹارگٹ کلنگ کی وجہ ڈرون حملہ ہونے کی تصدیق یا تردید نہیں کی تھی۔

اب اسرائیلی میڈیا نے باوثوق ذرائع سے دعویٰ کیا ہے کہ صالح العروری کی لبنان میں عارضی رہائش گاہ کو اسرائیلی فوج کے جیٹ طیارے سے داغے گئے 6 گائیڈڈ میزائلوں سے نشانہ بنایا گیا تھا۔

بعد ازاں لبنان کے ایک سیکیورٹی اہلکار نے بھی نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا تھا کہ اسرائیلی جیٹ طیارے سے داغے گئے سو سو گرام وزنی 6 گائیڈڈ میزائلوں میں 2 اس عمارت کو لگے جہاں صالح العروری مقیم تھے۔

Facebook
Twitter
Telegram
WhatsApp
Email

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

11 − seven =