جون 23, 2024

بغداد ہولناک بم دھماکے کے تین مجرموں کو پھانسی دے دی گئی

سیاسیات- 2016 میں عراق میں کیے گئے ہولناک بم دھماکے سے 300 سے زائد افراد کو  موت کے منہ میں پہنچانے والے 3 مجرموں کو پھانسی دے دی گئی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جولائی 2016  میں ماہ رمضان  کے دوران دارالحکومت بغداد میں ایک شاپنگ سینٹر کے قریب کھڑی بارودی مواد سے بھری  گاڑی میں زور دار دھماکہ ہوا  تھا  جس میں 300 سے زائد افراد جاں بحق اور سینکڑوں افراد زخمی ہوئے تھے۔

میڈیا رپورٹس میں  اس دھماکے کو  2003 میں امریکی قیادت میں  صدام حسین کو معزول کیے جانے کے بعد بغداد میں خودکش بمبار کی جانب سے کیے جانے  والے حملے  کے بعد اب تک کا  سب سے زیادہ خطرناک دھماکہ بتایا گیا تھا جس کی ذمہ داری اسلامک اسٹیٹ گروپ نے قبول کی تھی۔

2021  میں  بم دھماکے کے ماسٹر مائنڈ غزوان الزوبعی کو گرفتار کرکے پھانسی کی سزا دی گئی تھی، اس حملے میں 3 دہشت گردوں کو گرفتار کیا گیا تھا جنہیں اب  پھانسی دے دی گئی ہے۔

واضح رہے کہ عراق کے وزیر اعظم محمد شیعہ السوڈانی کے دفتر  کی جانب سے پھانسی پانے والے مجرمان کے نام  نہیں بتائے گئے ہیں  نہ ہی یہ بتایا گیا کہ پھانسی پانے والے 3 مجرموں کو کب سزا سنائی گئی تھی صرف پھانسی کے وقت کا بتایا گیا تھا۔

Facebook
Twitter
Telegram
WhatsApp
Email

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

16 − twelve =