جولائی 14, 2024

سلامتی کونسل نے غزہ میں حملوں کو روکنے کے لئے کوئی موثر اقدام نہیں کیا، اہرانی وزیر خارجہ

سیاسیات-ایرانی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ فلسطین کا مسئلہ ہمیشہ اسلامی جمہوریہ ایران کی ترجیح رہا ہے، کہا کہ سلامتی کونسل نے مقبوضہ علاقوں میں حملوں اور قتل و غارت کو روکنے کے لیے کوئی موثر اقدام نہیں کیا ہے۔

ایران کے وزیر خارجہ “حسین امیرعبداللہیان” نے تہران میں فلسطین سے متعلق بین الاقوامی اجلاس کے موقع پر غیر ملکی حکام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسئلہ فلسطین کے حوالے سے بین الاقوامی کانفرنس میں شرکت کے لئے اسلامی جمہوریہ ایران کی دعوت کو قبول کرنے پر میں آپ کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ آپ کی موجودگی انسانی اقدار اور گزشتہ دہائیوں کے دوران عالمی سطح پر حل طلب مسائل میں سے ایک اہم مسئلہ فلسطین کے لئے فکر مند ہونے کا ثبوت ہے۔

ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ مسئلہ فلسطین ہمیشہ سے اسلامی جمہوریہ ایران کی توجہ کا مرکز رہا ہے اور یہ امام خمینی (رہ) کے بلند افکار اور رہبر معظم کے اعلی وژن اور اسٹریٹجک نقطہ نظر میں مرکزی حیثیت رکھتا ہے۔

امیر عبداللہیان نے کہا کہ سلامتی کونسل نے مقبوضہ علاقوں میں حملوں اور ہلاکتوں کو روکنے کے لیے کوئی موثر اقدام نہیں کیا۔ اس کانفرنس کا مقصد جعلی اسرائیلی رجیم کے ظالمانہ حملوں کو روکنا، جنگی جرائم کا مقابلہ کرنا اور فلسطینیوں کے حق خودارادیت کی حمایت کے راستے تلاش کرنا ہے۔

Facebook
Twitter
Telegram
WhatsApp
Email

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

2 × four =